پاکستان کو زیرسمندر تیل و گیس ملنے کا فوری فائدہ کیا ہوگا؟

Gas and Oil
Gas and Oil
گزشتہ کچھ ہفتوں سے سوشل میڈیا اور مین اسٹریم میڈیا میں یہ خبریں گردش کر رہی ہیں کہ پاکستان کو اپنے ساحل سےتقریباً 250 کلومیٹر دور زیرسمندر تیل اور گیس کی تلاش میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ اگرچہ اس حوالے سے ابھی تک کوئی باضابطہ بیان سامنے نہیں آیا ہے لیکن کئی ماہرین کا کہنا ہے کہ پاکستان کو اپنے پانیوں میں آئل اور گیس کے ذخائر کی تلاش میں بھی مثبت اشارے ملنے لگے ہیں۔

اس حوالے سے اب تک ہونے والے کام میں سمندر کے اندرگہرائی میں تیز ترین بیک پریشرکو انتہائی مثبت پیش رفت محسوس کی جارہا ہے۔ اسی لیے مطلوبہ گہرائی تک پہنچنے پر انتہائی کثیرمقدار میں آئل و گیس کے ذخائر ملنے کی امید بڑھ گئی ہے۔

صرف یہی نہیں پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ ملک کو اہم ترین معاشی راستے فراہم کررہا ہے ۔ پاکستان نےنیلی معیشت یعنی بلیو اکانومی کی جانب قدم تیز کر دئیے ۔ملک میں ایک ہزار کلومیٹر سے زائد ساحلی پٹی اور دولاکھ نوے ہزار خصوصی معاشی زون میں چھپے خزانوں کی تلاش مزید تیز کردی گئی ہے ۔

پاکستان کو اس وقت فوری طور پر مضبوط میری ٹائم پالیسی کی ضرورت ہے جس میں شپنگ سیکٹر میں پالیسی کومزید بہتر بنا کر معاشی اہداف حاصل کئے جاسکتے ہیں ۔ نئی میری ٹائم پالیسی منظوری کے لئے وزیراعظم کے پاس پہنچ چکی ہے۔

تیل اور گیس ملنے کے حوالے سے میری ٹائم افئیرز کے ماہر کموڈور سید محمد عبیداللہ کہتے ہیں آف شور آئل اور گیس کی تلاش اورکامیابی کی قوی امیدپیدا ہوگئی ہے جس کے نتائج آئندہ چند دنوں میں سامنے آجائیں گے۔

ان کاکہنا ہے کہ آئل اور گیس دریافت ہونے پرآئل و گیس رگنگ اور سپورٹ کے شعبے میں بھاری سرمایہ کاری آسکے گی جس میں ٹگس، فائر ٹینڈرز اور ہیلی کاپٹرز جیسی مشینری سے سپورٹنگ شعبے میں بھی بھاری سرمایہ کاری کو فروغ ملے گا اور روزگار کے نئے مواقع دستیاب ہوں گے جب کہ اس مرحلے میں کامیابی کے بعد ریفائنری اور پیٹروکیمیکل کے شعبے میں بھی مزید سرمایہ کاری اور روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here