خادم حسین رضوی کا آفیشل ٹوئٹر ہینڈل بلاک کردیا گیا

Faizabad Dharna Case, Khadim Rizvi and Pir Afzal Qadri declared wanted
Faizabad Dharna Case, Khadim Rizvi and Pir Afzal Qadri declared wanted

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر نے تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم رضوی کا آفیشل ٹوئٹر ہینڈل بلاک کر دیا۔

سماجی ویب سائٹ انتظامیہ کے مطابق خادم رضوی کا ٹوئٹر ہینڈل قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کے باعث بند کیا گیا۔

قبل ازیں ٹوئیٹر نے علامہ خادم رضوی کا اکاؤنٹ بند کرنے کی پاکستان کی درخواست مسترد کر دی تھی۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ حکومت کو اصل چیلنج سوشل میڈیا سے درپیش ہے جہاں ہزاروں اکاؤنٹس سے جعلی خبریں بھی پھیلائی جا رہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا  پاکستان نے ٹوئٹر انتظامیہ سے خادم رضوی کا ٹوئٹر ہینڈل بند کرنے کی درخواست کی تھی جسے انہوں نے مسترد کردیا۔

تحریک لبیک پاکستان@TehreekLabbayk

We strongly condemn the ban on Twitter Verified Account of Allama Khadim Hussain Rizvi.

دوسری جانب تحریک لبیک پاکستان نے پارٹی قائد کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بلاک کرنے کی شدید مذمت کی ہے اور ٹوئٹر انتظامیہ سے اکاؤنٹ واپس بحال کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یاد رہے کہ علامہ خادم رضوی تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ ہیں اور ٹی ایل پی نے آسیہ بی بی کی سپریم کورٹ سے بریت کے فیصلے کے خلاف لاہور سمیت ملک کے مختلف شہروں میں احتجاجی دھرنے دیئے تھے۔

علامہ خادم رضوی نے لاہور میں ہونے والے دھرنے کی قیادت کی تھی اور حکومت سے مذاکرات کامیاب ہونے اور معاہدے کے بعد دھرنا ختم کیا تھا۔

TLP chief Khadim Rizvi’s Twitter handle suspended

The page shows “account suspended” when the handle is accessed-Screenshot/Twitter

The Twitter handle of Tehreek-e-Labbaik Pakistan (TLP) Khadim Hussain Rizvi was suspended late Sunday.

The page shows “account suspended” when the handle is accessed.

Earlier, Interior Minister Fawad Chaudhry during a talk at an event had said that Twitter had refused the government’s request to take down Rizvi’s account.

The account has been tweeting since four days while Twitter has refused to take it down, he said.

Human Rights Minister Shireen Mazari tweeted the same when questioned as to why the government isn’t writing to social media sites, including Facebook, to suspend the accounts.

The TLP, led by Rizvi, led a three-day protest against the Supreme Court verdict on the Aasia Bibi blasphemy case, during which agitators harassed common citizens and damaged property. The TLP chief is among 500 others booked for disruption of peace and blocking roads in Lahore. Others have also been booked for property damage and unrest across the country.