13سالہ امریکی ماہر کیمیادان بن گیا

The 13-year-old American became a chemist
The 13-year-old American became a chemist

آپ نے کئی ماہر کیمیا دانوں کو تحقیقات و تجربات کرتے دیکھا اور سُنا ہوگا لیکن جناب امریکا میں ایک بچہ ایسا بھی ہے جو صرف تیرا سال کی عمر میں ماہر کیمیا دان بن گیا ہے۔

یہ بچہ گیارہویں جماعت کا طالب علم ہیں تو دوسری جانب وہ ٹولیڈو یونیورسٹی کے شعبہ ماحولیات اور ریڈیالوجی سیفٹی میں سائنسداں ہے اور صرف یہی نہیں وہ اسکول میں اپنے سینئر اور جونیئر دوستوں سے کہتے ہیں کہ اگر انہیں کیمیا سے متعلق کوئی سوال پوچھنا ہے تو وہ اسے ای میل پر رابطہ کرسکتے ہیں، جس کا فوری جواب دیا جائے گا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ٹولیڈو یونیورسٹی میں 12 سال کی عمر تک کے بچوں کا داخلہ بھی منع ہے لیکن ڈینیئل یہاں آزادانہ تحقیق کررہے ہیں اور بچے کی ذہانت کا یہ عالم ہے کہ وہ 2017 میں مائیکل ینگ آرگینک کیمسٹری کے لیکچر کے وسط مدتی امتحان میں کئی بچے فیل ہوئے اور کامیاب ہونے والے بھی زیادہ سے زیادہ 50 نمبر لے سکے تاہم ڈینیئل نے 100 میں سے 99 نمبر لیے۔

ڈینیئل چوٹی سی عمر میں ریسرچ پیپرز لکھ رہے ہیں جبکہ ڈینیئل کے ساتھ کام کرنے والے تمام ساتھی ان کی ذہانت کے معترفت ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here