سوات میں آرمی یونٹ کے اسپورٹس ایریا میں خود کش حملہ، 11 اہلکار شہید

Suicide attack in the sports area of Army unit in Swat, 11 personnel martyred
Suicide attack in the sports area of Army unit in Swat, 11 personnel martyred

:سوات

سوات کی تحصیل کبل میں آرمی یونٹ میں ہونے والے خود کش حملے کے نتیجے میں ایک افسر سمیت 11 سیکیورٹی اہلکار شہید اور 13  زخمی ہو گئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق خود کش حملہ سوات کی تحصیل کبل کے علاقے شریف آباد میں واقع آرمی یونٹ کے اسپورٹس ایریا میں ہوا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق خود کش حملے میں ایک افسر سمیت 11 اہلکار شہید اور 13 زخمی ہوئے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق دھماکے میں زخمی ہونے والوں کو طبی امداد کے لیے سیدو شریف اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

دھماکے کے فوری بعد سیکیورٹی اہلکاروں کی بڑی تعداد نے علاقے کا محاصرہ کر  کے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

خیال رہے کہ وادی سوات میں 2007 سے 2009 کے درمیان طالبان نے مکمل طور پر کنٹرول حاصل کر لیا تھا لیکن پھر سیکیورٹی فورسز کی جانب سے متعدد آپریشنز کے بعد اسے واپس حکومتی کنٹرول میں لایا گیا۔

سیکیورٹی فورسز نے سوات سے مقامی اور غیر ملکی دہشت گردوں کے خاتمے کے لیے 2007، 2008 اور 2009 میں آپریشن راہ نجات کے نام سے کارروائیاں کیں۔

اس کے علاوہ آرمی نے سوات کے سب سے بڑے شہر مینگورہ کا کنٹرول حاصل کرنے کے لیے 2009 میں راہ راست کے نام سے آپریشن بھی کیا۔

بزدلانہ حملے دہشت گردی کے خاتمے کے ہمارے عزائم کو روک نہیں سکتے، وزیراعظم

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے سوات میں آرمی یونٹ پر خود کش حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے شہیدوں کے درجات کی بلندی اور زخمیوں کی جلد صحتیابی کے لیے دعا کی ہے۔

دہشتگردی کو جڑ سے ختم کر کے دم لیں گے، وزیر دفاع

وزیر دفاع خرم دستگیر نے بھی واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشتگردی کو جڑ سے ختم کر کے دم لیں گے، دہشت گردی کی خلاف ہمارا عزم غیر متزلزل رہے گا۔

وزیر دفاع خرم دستگیر نے کہا کہ وہ شہادتوں پر افسوس اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعاگو ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈرپوک دشمن پاکستان کے بہادر جوانوں کا مقابلہ نہیں کر سکتا اور ایسے بزدلانہ حملے دہشت گردی کے خاتمے کے ہمارے عزائم کو روک نہیں سکتے۔

دہشت گرد حملوں کے ذریعے پاکستان کا امن چھیننے کی ہر سازش ناکام بنائیں گے، نواز شریف

مسلم لیگ (ن) کے صدر نواز شریف نے سوات کے علاقے کبل میں خودکش حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پوری قوم شہدا کے حوصلوں کو سلام پیش کرتی ہے۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے شہداء کے درجات کی بلندی کے لیے دعا کی اور اہلخانہ سے ہمدردی کا اظہار کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ  پاکستان کے بیٹوں نے اپنے لہو سے امن کے چراغ روشن کیے ہیں اور ہم دہشت گرد حملوں کے ذریعے پاکستان کا امن چھیننے کی ہر سازش ناکام بنائیں گے۔

حملے کی شدید مذمت کرتا ہوں، عمران خان

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے بھی حملے کی مذت کی ہے۔

 اپنے سوشل میڈیا پیغام میں عمران خان نے کہا کہ ’’میں سوات میں آرمی یونٹ کے اسپورٹس ایریا میں ہونے والے خود کش حملے کی شدید مذمت کرتا ہوں‘‘۔

دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑنے کے لیے قوم متحد ہے،  اقبال ظفر جھگڑا

گورنر خیبر پختونخوا اقبال ظفر جھگڑا نے بھی کبل میں خودکش حملے کی مذمت کرتے ہوئے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا۔

اقبال ظفرجھگڑا نے فوج کے بہادر جوانوں اور افسران کوخراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے ناسور کو جڑ سے اکھاڑنے کے لیے پوری قوم متحد ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی فورسز اورعوام کے تعاون سے دہشت گردوں کا خاتمہ کیا جائے گا۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here