سینیٹرز کا آرمی چیف کی بریفنگ پر اطمینان کا اظہار

Senators express satisfaction over army chief briefing
Senators express satisfaction over army chief briefing

:اسلام آباد

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی بریفنگ پر سینیٹرز نے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سینیٹ کمیٹی کو قومی سلامتی سمیت دیگر امور پر طویل بریفنگ دی۔

نجی نیوز چینل سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے سینیٹ کی دفاعی کمیٹی کے چیرمین مشاہد حسین سید نے بریفنگ کا احوال بتاتے ہوئے کہا کہ آرمی چیف کی بریفنگ کے دوران اتنی تفصیلی اور کھل کر بات ہوئی، یہ پہلی مرتبہ ہوا، کوئی ایسا مسئلہ نہیں تھا جس پر سوال نہیں کیا گیا اور آرمی چیف نے جواب نہ دیا ہو۔

مشاہد حسین نے کہا کہ بریفنگ میں قومی سلامتی، دہشت گردی کے خلاف جنگ، امریکا سے تعلقات، افغان حکمت عملی، بھارت، مشرقی وسطیٰ کے مسائل اور ملک کے اندرونی معاملات سمیت سب پر بات ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ بریفنگ میں بہت اچھا ماحول رہا، سب بہت مطمئن ہیں، بریفنگ کے دوران قہقہے بھی لگ رہے تھے، آرمی چیف نے کہا کہ وہ کھل کر پارلیمنٹ کی بالادستی کو مانتے ہیں۔

دفاعی کمیٹی کے چیرمین نے مزید کہا کہ یہ سول ملٹری ریلیشن کے لیے اچھی بات ہے، آج تمام خوف و خدشات سب دور ہوگئے ہیں، واضح ہوگیا کہ پاکستان ایک جاندار جمہوریت ہے اور تمام ستون آئین کےمطابق کام کررہے ہیں، ملک میں جمہوری عمل آگے چلے گا، آج ہم آہنگی کو بہت تقویت پہنچی ہے۔

 مشاہد حسین کا کہنا تھا کہ یہ بریفنگ عسکری حکام اور پارلیمانی رہنماؤں کے لیے بہت اچھی تھی، آج عسکری حکام اور جمہوریت کے لیے بھی تاریخی دن ہے۔

فاروق ایچ نائیک کی گفتگو

دوسری جانب پیپلزپارٹی کے رہنما اور سابق چیرمین سینیٹ فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ آرمی چیف نے طویل بریفنگ دی اور یہ پہلی بار ہوا، انہوں نے ہر چیز پر کھل کر بات کی، تمام سینیٹرز نے سوالات کیے، جنرل باجوہ نے بڑا تحمل مزاجی کے ساتھ تفصیلاً جواب دیا، جہاں جہاں ڈی جی آئی ایس آئی کی ضرورت پڑی انہوں نے بھی بات کی، آج سب کے خدشات دور ہوگئے ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here