سی پیک خطے میں خوشحالی کا باعث ہوگا، وزیراعظم

The sea pack will bring prosperity to the region, Prime Minister
The sea pack will bring prosperity to the region, Prime Minister

:ڈیووس

عالمی اقتصادی فورم کے سالانہ اجلاس میں شرکت کے لیے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سوئٹرزلینڈ کے شہر ڈیووس میں  موجود ہیں۔

اس موقع پر ‘ایک خطہ، ایک سڑک کے اثرات’ کے موضوع پر مباحثے میں شرکت کے دوران وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سی پیک خطے میں خوشحالی کا باعث ہوگا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ‘پاک-چین اقتصادی راہداری (سی پیک) ‘ایک خطہ ایک سڑک’ منصوبے کا اہم جزو ہے، جو خطے میں اقتصادی سرگرمیوں کے فروغ اور خوشحالی کا باعث ہوگا’۔ان کا  مزید کہنا تھا کہ علاقائی روابط کے اس منصوبے سےخطے کے عوام ایک دوسرے کے قریب آئیں گے اور ایک ملک دوسرے ملک سے منسلک ہوگا۔

سوئٹزرلینڈ کے شہر ڈیووس میں گذشتہ روز (23 جنوری) سے شروع ہونے والا عالمی اقتصادی فورم کا 48 واں اجلاس 26 جنوری تک جاری رہے گا۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی فورم کے بانی اور ایگزیکٹو چیئرمین کی دعوت پر اجلاس میں شرکت کر رہے ہیں۔

اس سے قبل جب وزیراعظم زیورخ ایئرپورٹ پہنچے تو وہاں ان کا استقبال سوئٹزرلینڈ میں تعینات پاکستانی سفیر احمد نسیم وڑائچ اور دیگر حکومتی عہدیداران نے کیا۔عالمی اقتصادی فورم میں شرکت کے دوران وزیراعظم شاہد خاقان عباسی عالمی بینک، بین الاقوامی مالیاتی فنڈ، ایشیائی ڈیولپمنٹ بینک، اسلامی ترقیاتی بینک کے سربراہوں کے علاوہ دیگر ممالک کے صدور اور وزرائے اعظم سے اہم ملاقاتیں کریں گے جن کے دوران دوطرفہ اقتصادی تعاون کو نئی بلندیوں تک لے جانے کے بارے میں ثمرآور تبادلہ خیال ہوگا۔

دوسری جانب عالمی میڈیا کے ساتھ انٹرویوز بھی وزیراعظم کے پروگرام کا حصہ ہیں۔

عالمی اقتصادی فورم اجلاس میں 70 سے زائد ملکوں کے سربراہان، 38 سے زائد عالمی تنظیموں کے سربراہ جبکہ سیاست، کاروبار اور دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے 3 ہزار سے زائد افراد شرکت کر رہے ہیں۔اس اجلاس میں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی بھی شریک ہیں، جنہوں نے گذشتہ روز سیشن سے خطاب کیا جبکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ فورم کے آخری روز یعنی جمعے کو اختتامی خطاب کریں گے۔

واضح رہے کہ ڈیووس میں اِن دنوں موسم انتہائی سرد ہے اور برفباری نے معمولاتِ زندگی کو متاثر کر رکھا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here