نامزد وزیراعلیٰ پنجاب پر مقدمہ قتل میں دیت ادا کرکے صلح کرنے کا انکشاف

PTI's Punjab CM nominee paid blood money to settle murder case: sources
PTI's Punjab CM nominee paid blood money to settle murder case: sources

:لاہور

پاکستان تحریک انصاف کے نامزد وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے متعلق مقدمہ قتل میں دیت ادا کرکے صلح کرنےکا انکشاف ہوا ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اعلان کیا تھا کہ وہ وزیراعلیٰ پنجاب کے لیے نئے اور کلین انسان کو سامنے لائیں گے اور گزشتہ روز ہی عثمان بزدار کے نام کا اعلان کیا گیا تھا لیکن اب ان سے متعلق بھی قتل کے مقدمے میں دیت دے کر صلح کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔

پولیس کے مطابق 1998 میں پولنگ کے دوران فائرنگ سے 6 افراد مارے گئے تھے اور  عثمان بزدار اور ان کے والد پر قتل کی منصوبہ بندی کا مقدمہ درج ہوا تھا۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ نامزد وزیراعلیٰ سمیت دیگر ملزمان کو عدالت نے مجرم ٹہھرایا تھا لیکن عثمان بزدار اور ان کے والد نے 75 لاکھ روپے دیت ادا کرکے فریقین سے صلح کی تھی۔

واضح رہےکہ گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ سردار عثمان وہ واحد ایم پی اے ہے جس کے گھر میں بجلی نہیں ہے، مجھے یقین ہے کہ ایماندار وزیراعلیٰ صوبے کے لیے زبردست کام کرے گا اور ہمارے وژن پر بھی پورا اترے گا۔

عثمان بزدار نے 2013 کے الیکشن میں مسلم لیگ (ن) کے ٹکٹ پر حصہ لیا تھا، تاہم کامیاب نہیں ہوسکے تھے، بعدازاں جنوبی پنجاب صوبہ محاذ سے وابستگی کے بعد وہ پی ٹی آئی میں شامل ہوگئے۔

25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں وہ پنجاب اسمبلی کے حلقے پی پی 286 ڈیرہ غازی خان 2 سے پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر 27 ہزار 27 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔

عثمان بزدار ڈیرہ غازی خان کی تحصیل ٹرائبل ایریا کے ناظم بھی رہ چکے ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here