کراچی میں لوڈشیڈنگ پر بلدیاتی نمائندوں کا کے الیکٹرک ہیڈ آفس کے باہر احتجاج

Protest outside the k-Electric Head Office on load shading in Karachi
Protest outside the k-Electric Head Office on load shading in Karachi

:کراچی

کراچی میں طویل غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف بلدیاتی نمائندوں نے کے الیکٹرک کے ہیڈ آفس کے باہر احتجاج کیا۔

کراچی میں گرمی کے آغاز کے ساتھ ہی کے الیکٹرک کی جانب سے طویل غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے اور کےالیکٹرک نے سوئی سدرن کی جانب سے گیس فراہم نہ کرنے کا جواز پیش کیا ہے۔

کراچی کے بلدیاتی نمائندوں نے شہر میں طویل غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر کے الیکٹرک کے ہیڈ آفس کے سامنے احتجاج کیا جس میں میئر کراچی وسیم اختر نے بھی شرکت کی۔

احتجاجی مظاہرے سےخطاب کرتے ہوئے وسیم اختر نے کہا کہ سوئی سدرن اور کے الیکٹرک کے درمیان آپس کا تنازع ہے، کراچی کے لوگوں کا دونوں کمپنیوں کے واجبات اور تنازع سے کوئی تعلق نہیں، اس لیے ان کے مسائل کراچی والے کیوں بھگتیں۔

میئر کراچی نےکہا کہ کے الیکٹرک اور ایس ایس جی سی نےکراچی کےشہریوں کو یرغمال بنایا ہوا ہے، صدر پاکستان اور وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ان مسائل کو فی الفور ختم کرائیں۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here