ایوانکا ٹرمپ کی تواضع، مودی سرکار نے نظام خاندان کو ناراض کردیا

Ivanka Trump served, Nizam's Kin angry with modi government

حیدرآباد:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صاحبزادی ایوانکا ٹرمپ ان دنوں بھارت کے دورے پر ہیں، جہاں ان کی تواضع میں کوئی کسر نہیں چھوڑی گئی۔

لیکن مودی سرکار امریکی دختر اول کو خوش کرنے میں ایسی مگن ہوئی کہ نظام دکن کے خاندان کو بھی ناراض کردیا اور خاندان کے چشم و چراغ نجف علی خان کو حیدرآباد میں ‘تاج فلک نما’ ہوٹل میں دیئے گئے عشائیے میں مدعو ہی نہیں کیا۔

این ڈی ٹی وی کی ایک رپورٹ کے مطابق حیدرآباد میں ایوانکا ٹرمپ کے لیے جس جگہ پر عشائیے کا اہتمام کیا گیا تھا وہ جگہ کبھی نجف علی خان کے آباؤ اجداد کی رہائش گاہ ہوا کرتی تھی لیکن اس اہم موقع پر نظام خاندان کو دعوت نامہ ہی نہیں دیا گیا۔

ساتویں اور آخری نظام میر عثمان علی خان کے پوتے نجف علی خان نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ کانفرنس کے منتظمین کو کئی خطوط لکھنے کے باوجود انہیں کوئی جواب نہیں ملا۔

حیدرآباد میں واقع ہوٹل فلک نما، چھٹے نظام میر محبوب علی خان کی رہائش گاہ تھی، جن کا انتقال 1911 میں ہوا۔ بعدازاں ایک عشرے قبل اس محل کو تاج گروپ نے ایک فائیو اسٹار ہوٹل میں تبدیل کردیا تھا۔

Hotel in Hayderabad

دوسری جانب ایوانکا ٹرمپ کو خوش کرنے کے لیے کھانوں کی لائن لگا دی گئی اور دہی کے کباب،گوشت شکم پوری کباب، ملائی کوفتہ، مرغ پستہ کا سالن اور انواع و اقسام کے سوپ اور میٹھے ڈائننگ ٹیبل کی زینت بنے۔

امریکی دختر اول کے دورہ بھارت کے دوران سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے، لیکن شاید یہ انتظامات ایوانکا ٹرمپ کو مطمئن نہ کر سکے اور حیدرآباد آمد کے دوران انہوں نے اپنی ذاتی بلٹ پروف گاڑی استعمال کی۔

Hotel in Hyderabad

واضح رہے کہ ایوانکا ٹرمپ گلوبل انٹرپرینورشپ سمٹ (جی ای ایس) میں شرکت کی غرض سے بھارت کے دورے پر ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here