انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھنے والوں کے ساتھ ’ہاتھ‘ ہوگیا،شرم کے مارے اپنے چہرے چھپانے پر مجبور

'Hand' with those who watched porn movies on the internet, forced to hide their face with shame
'Hand' with those who watched porn movies on the internet, forced to hide their face with shame

:سان فرانسسکو

فحش فلموں کی لعنت پہلے بھی بہت عام تھی لیکن اب ورچوئل رئیلٹی کی ٹیکنالوجی سے اسے مزید مقبول بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ اتفاق دیکھئے کہ اس نئی ٹیکنالوجی کے طفیل فحش فلمیں دیکھنے والوں کا ایسا زور کا جھٹکا لگا ہے کہ یقینا ان میں سے بہت سے اپنی روش بدلنے پر مجبور ہوجائیں گے۔

ویب سائٹ ’مینز ہیلتھ‘ کے مطابق ایک مشہور ورچوئل رئیلٹی ایپ SinVerکے بارے میں انکشاف سامنے آیا ہے کہ اس میں موجود خامیوں کی وجہ سے ہزاروں صارفین کا پرائیویٹ نوعیت کا ڈیٹا چوری ہو گیا ہے۔ یہ انکشاف سائبر سکیورٹی ادارے ڈیجیٹل انٹرپشن کی جانب سے مSinverختلف ایسی ایپس کی ٹیسٹنگ کے دوران سامنے آیا جنہیں خاص طور پر فحش فلموں کے لئے تیار کیا گیا ہے۔

SinVer نامی ایپ کی ٹیسٹنگ کے دوران معلوم ہوا کہ اس کے ذریعے فحش فلمیں دیکھنے والے ہزاروں صارفین کے ڈیٹا تک رسائی حاصل کی جاسکتی ہے۔ کوئی بھی ہیکر باآسانی اس ایپ کو ہیک کرکے ناصرف صارفین کا ذاتی نوعیت کا ڈیٹاچوری کرسکتا ہے بلکہ ان کی تمام ہسٹری حاصل کرکے یہ بھی جان سکتا ہے کہ وہ کس وقت اور کس قسم کی ویب سائٹوں کو دیکھتے رہے ہیں۔

ٹیسٹنگ کے دوران 20ہزار سے زائد صارفین کے یوزرنیم اور ای میل ایڈریس بھی حاصل کرلئے گئے جبکہ یہ انکشاف بھی سامنے آیا کہ صارفین ادائیگی کے لئے اپنے اکاﺅنٹ نمبر اور پاسورڈ وغیرہ کی جو تفصیلات دیتے ہیں وہ بھی چوری ہوسکتی ہیں۔ ایپ تیار کرنے والی کمپنی کا کہنا ہے کہ اس کی خرابی دور کرلی گئی ہے تاہم سائبر سکیورٹی ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ اس نوعیت کی ایپس کو استعمال کرنا صارفین کے لئے ناصرف شناخت کی چوری کی صورت میں شرمندگی کا سبب بن سکتا ہے بلکہ ادائیگی سے متعلقہ معلومات چوری ہونے پر بھاری مالی نقصان کا سبب بھی بن سکتا ہے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here