پی ایس ایل میں سٹے بازی کی کوشش ناکام، پی سی بی نے بکی کی تصویر جاری کردی

Failed speculation in the PSL PCB releases photo of the bookie
Failed speculation in the PSL PCB releases photo of the bookie

:شارجہ

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پی ایس ایل کے تیسرے ایڈیشن میں سٹے بازی کی کوشش ناکام بنادی اور ایک بکی کی تفصیلات بھی جاری کردیں۔

پی سی بی کے مؤثر اقدامات کی وجہ سے انٹرنیشنل سٹے بازوں کے نیٹ ورک کی پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کو بدنام کرنے کی ایک اور سازش ناکام ہوگئی اور غیر ملکی گروہ سے تعلق رکھنے والے سٹے باز اپنے عزائم میں کامیاب نہیں ہوسکے۔

پی سی بی کی جانب سے ایک بکی کی تصویر بھی جاری کی گئی، عمر نامی بکی کا تعلق بنگلادیش سے ہے۔

سٹے بازوں نے اسپاٹ فکسنگ کی کوشش کی اور اس بار کھلاڑیوں سے رابطے کا ذریعہ سوشل میڈیا ویب سائٹس تھیں، جسے پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ نے ناکام بنا دیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے تفتیش کاروں نے انٹیلی جنس نیٹ ورک کے ذریعے جو شواہد حاصل کیے ہیں، اس کے مطابق ان سٹے بازوں کا تعلق بھارت اور بنگلہ دیش سے ہے، جنہوں نے پاکستان سپر لیگ کے دوران کم از کم تین ٹیموں کے کھلاڑیوں سے واٹس ایپ اور فیس ٹائم کے ذریعے رابطہ کیا تھا، لیکن تینوں کرکٹرز نے فوری طور پر اس واقعے کو رپورٹ کردیا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے حد درجہ مصدقہ اور قابل اعتماد ذرائع نے تصدیق کی ہےکہ ان کے پاس اس بات کے ٹھوس شواہد ہیں کہ دونوں سٹے باز دبئی میں دکھائی دیئے ہیں تاہم ابھی تک ٹیم ہوٹلوں سے دور ہیں۔

دوسری جانب پاکستان کرکٹ بورڈ نے اپنے طور پر جو تحقیقات کی ہیں، اس کے مطابق دونوں سٹے بازوں کا تعلق انٹرنیشنل مافیا سے ہے اور دونوں آئی سی سی اور ٹیسٹ کھیلنے والے ملکوں کی فہرست میں بلیک لسٹ ہیں۔

سٹے بازوں کی جانب سے اس نئی پیشکش کے بعد پی سی بی اینٹی کرپشن یونٹ کی جانب سے دبئی کے ہوٹلوں میں ہنگامی بریفنگ کا اہتمام کیا گیا جس میں کھلاڑیوں کو ایک بار پھر خبردار کیا گیا۔

پی سی بی نے کھلاڑیوں سے بھی کہا ہے کہ وہ سوشل میڈیا سائٹس کے استعمال میں احتیاط برتیں۔

واضح رہے کہ گذشتہ سال اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کی وجہ سے پانچ کرکٹرز شرجیل خان، خالد لطیف، محمد عرفان، شاہ زیب حسن اور ناصر جمشید کو سزائیں اور بھاری جرمانے ہوچکے ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here