نواز شریف کےخلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ ضمنی ریفرنس پر سماعت جاری

Court hears Flagship, Al-Azizia references against Nawaz
Court hears Flagship, Al-Azizia references against Nawaz

:اسلام آباد

احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انوسیٹمنٹ ضمنی ریفرنسز کی سماعت کے دوران استغاثہ کی گواہ نورین شہزادی کا بیان قلمبند کرلیا گیا۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نواز شریف کے خلاف دائر نیب ریفرنسز کی سماعت کر رہے ہیں۔

احتساب عدالت نے آج 5 گواہوں کو بیان ریکارڈ کرنے کے لیے طلب کیا تھا۔

سابق وزیراعظم نواز شریف آج ایک مرتبہ پھر احتساب عدالت کے روبرو پیش ہوئے ہیں، اس سے قبل وہ 20 سے زائد مرتبہ اپنی حاضری یقینی بناچکے ہیں۔

سماعت سے قبل میڈیا سے گفتگو میں سابق وزیراعظم نے سینیٹ الیکشن میں صادق سنجرانی کی فتح کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ‘بنی گالہ والے اور کراچی والے ایک ہی دربار پر جاکر جھکے، اس کی کیا خاص وجہ تھی وہ عوام کے سامنے آنی چاہیے۔

نیب ریفرنسز کا پس منظر

سپریم کورٹ کے پاناما کیس سے متعلق 28 جولائی 2017 کے فیصلے کی روشنی میں نیب نے شریف خاندان کے خلاف 3 ریفرنسز احتساب عدالت میں دائر کیے، جو ایون فیلڈ پراپرٹیز، العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسمنٹ سے متعلق تھے۔

نیب کی جانب سے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس (لندن فلیٹس) ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف ان کے بچوں حسن اور حسین نواز، بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کو ملزم ٹھہرایا گیا۔

دوسری جانب العزیزیہ اسٹیل ملز جدہ اور 15 آف شور کمپنیوں سے متعلق فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس میں نواز شریف اور ان کے دونوں بیٹوں حسن اور حسین نواز کو ملزم نامزد کیا گیا ہے۔

نیب کی جانب سے ان تینوں ریفرنسز کے ضمنی ریفرنسز بھی احتساب عدالت میں دائر کیے جاچکے ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here