غربت کے خاتمے کے لئے مالی امداد کے ساتھ روزگار فراہم کرنا چاہتے ہیں، وزیراعظم

Country passing through critical juncture, change to be seen in six months: PMCountry passing through critical juncture, change to be seen in six months: PM
Country passing through critical juncture, change to be seen in six months: PM

:اسلام آباد

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ہم غربت کے خاتمے کوصرف مالی امداد تک محدود نہیں رکھنا چاہتے بلکہ روزگار کے مواقع فراہم کرکے ایک پائیدار حل چاہتے ہیں۔

 وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت غربت کے خاتمے اوراس سے متعلقہ دیگر اصلاحات کے بارے میں اجلاس ہوا، جس میں وزیرخزانہ اسد عمر، وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار، مشیر برائے اسٹیبلشمنٹ محمد شہزاد ارباب  اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

اجلاس میں غربت کے خاتمے، فنی تعلیم کی ترویج ، روزگار کے مواقع میں اضافہ، مالی امداد تک رسائی، سستی رہائش، سماجی تحفظ، صحت انصاف کارڈ اور دیگر متعلقہ اقدامات اور اصلاحات کے حوالے سے وزیراعظم کو بریفنگ دی گئی جب کہ جامع اور مربوط حکمت عملی پر غور کیا گیا۔

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت غربت کے خاتمے کو صرف مالی امداد تک محدود نہیں رکھنا چاہتی بلکہ دیگر شعبوں میں اصلاحات اور روزگار کے مواقع فراہم کرکے ایک پائیدار حل چاہتی ہے، غربت کے خاتمے کے لیے نچلی سطح پر لوکل گورنمنٹ کے نظام کو استعمال کیا جائے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ اسٹینڈرڈ گروتھ صحت کے شعبے میں سب سے اہم مسئلہ ہے، جو ہمارے بچوں کو ترقی کے مساوی مواقع سے محروم کردے گا، اس حوالے سے فوری اقدامات اٹھانے اور اسٹینٹرڈ گروتھ کے حل کے لیے صحت، تعلیم، خوراک، ماحولیات اوردیگر متعلقہ شعبوں میں ہم آہنگی کی ضرورت ہے۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here