خورشید شاہ کا سندھ میں ترقی دیکھنے کی دعوت، مگر سندھ کےزمینی حقائق بالکل برعکس

Come to Sindh and see real progress
Come to Sindh and see real progress

:کراچی

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور صوبہ سندھ کی حکمران جماعت پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے رہنما سید خورشید شاہ نے دعویٰ کیا ہے کہ اگر کسی نے ترقی دیکھنی ہے تو ان کے ساتھ سندھ چلے اور دیکھے کہ غریبوں کو کیسے تعلیم اور صحت دی جاتی ہے۔

تاہم زمینی حقائق اس بیان کے بالکل برعکس دکھائی دیتے ہیں نجی نیوز کے نمائندے نے سندھ کے تیسرے بڑے شہر اور خورشید شاہ کے حلقے سکھر کا دورہ کیا اور وہاں شہریوں سے اس بیان پر تاثرات لیے۔

شہریوں نے خورشید شاہ کو مشورہ دیا کہ جب وہ لوگوں کو اپنے ساتھ لائیں تو ان کے لیے سردرد کی گولیاں اور ایسی دوائیں لائیں کہ وہ بیمار نہ ہوں۔

Come to Sindh and see real progress

ان کا کہنا تھا کہ سکھر کا سب سے بڑا مسئلہ پانی کا ہے جسے پی کر لوگ بیمار ہوجاتے ہیں۔

شہریوں کے مطابق سکھر میں این آئی سی وی ڈی بنایا گیا جو کہ قابل تعریف اقدام ہے تاہم دیگر سرکاری اسپتالوں کی جانب بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے جہاں اکثر اوقات ایک بستر پر دو مریض موجود ہوتے ہیں۔

Come to Sindh and see real progress

شہریوں کا کہنا تھا کہ سڑکوں کی حالت بھی خراب ہے اور انہیں بھی مرمت کی ضرورت ہے، لوگوں کو بنیادی حقوق ملنے چاہیئیں۔

Come to Sindh and see real progress

حیدرآباد کے مختلف علاقوں میں کچڑے کے ڈھیر نظر آتے ہیں جبکہ سڑکوں کا بھی برا حال ہے۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here