مئی 2018 تک حلقہ بندیوں کی کارروائی مکمل کرلیں گے، سیکرٹری الیکشن کمیشن

assembly elections will be completed by May 2018, the Secretary Election Commission
assembly elections will be completed by May 2018, the Secretary Election Commission

:اسلام آباد

سیکرٹری الیکشن کمیشن بابر یعقوب فتح محمد کا کہنا ہے کہ آئندہ عام انتخابات کی تاریخ کا اعلان ابھی نہیں کرسکتے تاہم 3 مئی 2018 تک حلقہ بندیوں سے متعلق کارروائی مکمل کرلی جائے گی۔

چیف الیکشن کمشنر کی زیر صدارت حلقہ بندیوں سے متعلق ہنگامی اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ کے دوران سیکرٹری الیکشن کمیشن کا کہنا تھا کہ الیکشن کی تیاریوں کا کام شروع کردیا جب کہ 15 جنوری سے نئی حلقہ بندیوں کا کام شروع کیا جائے گا اور اس مقصد کے لئے 5 کمیٹیاں بھی مقرر کردی گئی ہیں۔

بابر یعقوب فتح محمد نے مزید کہا کہ حلقہ بندیوں کے پروپوزل کے لئے 45 رن رکھے گئے ہیں جب کہ صوبائی حکومتوں اور محکمہ شماریات کو 10 جنوری تک نقشے اور مواد دینے کا کہا ہے، اگر نقشے اور میٹریل جلد مل جاتے ہیں تو حلقہ بندیاں بھی پہلے ہوجائیں گی۔

سیکرٹری الیکشن کمیشن کے مطابق 3 مئی 2018 تک حلقہ بندی سے متعلق کارروائی مکمل کرلی جائے گی اور 5 مئی کے بعد ووٹر فہرستوں میں تبدیلی نہیں ہوسکے گی جب کہ 75 لاکھ ووٹرز کی رجسٹریشن بھی شروع کردیں گے۔

سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ اجلاس کے دوران آج سے ریونیو باڈیز کو منجمد کرنے کا فیصلہ کیا گیا اور آج کے بعد کسی یونین، ضلع اور تحصیل میں رد و بدل نہیں ہوگا۔

سیکرٹری الیکشن کمیشن کے مطابق سیکرٹری شماریات نے بتایا کہ صدر مملکت ممنون حسین نے اب تک آئینی ترمیم پر دستخط نہیں کئے، صدر کے دستخط سے بل ایکٹ بنے گا تو مردم شماری کے عبوری نتائج ملیں گے۔

سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ حساس پولنگ اسٹیشنز پر سی سی ٹی وی کیمرے لگائے جائیں گے اور کیمرے لگانے کے لئے حکومتیں اپنے وسائل استعمال کریں گی۔

چیف الیکشن کمشنر کی زیرصدارت ہنگامی اجلاس 

الیکشن کمیشن ہیڈ کوارٹر میں چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار محمد رضا کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں چاروں صوبائی چیف سیکرٹریز، چیرمین نادرا، سیکرٹری شماریات اور چاروں صوبائی الیکشن کمشنرز سمیت دیگر حکام نے شرکت کی۔

اجلاس کے دوران انتخابی حلقہ بندیوں پر کام شروع کرنے کی حکمت عملی سمیت دیگر اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here