آرٹیکل 190

لاہور آن لائن ٹی وی 17 نومبر 2017

مسلم لیگ (ن) کے منحرف رکن قومی اسمبلی اور سابق وزیراعظم ظفر اللہ جمالی نے کہا ہے وطن کی خاطر اراکین استعفے دینے کیلئے تیار بیٹھے ہیں، نوازشریف کیسے خریدیں گے، ختم نبوت سے متعلق حلف نامے میں تبدیلی کے ذمہ داروں کو سزا نہیں ملی اور حلف نامے کی اصل حالت میں بحالی بھی دباؤ کے بعد عمل میں لائی گئی، عدلیہ کے پاس آرٹیکل 190 کے تحت ملک بچانے کا اختیار ہے اور انشااللہ حکومت میں ٹوٹ پھوٹ کا عمل جلد شروع ہوگا۔

نجی ٹی وی کو انٹرویو میں انہوں نے کہا ملک میں جو بھی ہونے والا ہے عوام کے لئے اچھا ہی ہوگا بس حکمران جھوٹ بولنا اور کرسی کی فکر چھوڑ دیں تو ملک قائم و دائم رہے گا۔ محب وطن اور اسلام سے محبت کرنیوالے اراکین اسمبلی کی وجہ سے حکومت دباؤ کا شکار ہوئی اور ختم نبوت کے حلف نامے کو اصل حالت میں بحال کرنے پر مجبور ہوئی تا ہم اب بھی انہوں نے غلطی کے مرتکب ذمہ داروں کو بچالیا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا جمہوریت کا نام لے کر صرف جمہوریت کو بد نام کیا گیا اور کوئی ایک کام بھی جمہوری اصولوں کے مطابق نہیں کیا گیا جبکہ جمہوریت کے لئے قربانیاں دینی پڑتی ہیں لیکن یہاں تو عدلیہ اور شرفا کیخلاف دھڑے بندی ہو رہی ہے۔

ظفر اللہ جمالی نے کہا قربانیاں دینے کا مطلب ہے اداروں کوعزت دیں لیکن اس نام نہاد جمہوریت میں وزرا ء چور ثابت ہو رہے ہیں ۔ انہو ں نے کہا 2013 میں شہبازشریف نے ایک بار ساتھ دینے کا کہا تھا میں نے جواباً کہا بسم اللہ آپ کے ساتھ غیر مشروط چلتا ہوں لیکن شہبازشریف سے دو ٹوک کہا تھا عزت دیں گے تو عزت ملے گی۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here