پنجاب حکومت کے تمام ادارے اور محکمے نیب سے مکمل تعاون کر رہے ہیں: ترجمان

All government agencies and departments of Punjab government are fully cooperating with NAB
All government agencies and departments of Punjab government are fully cooperating with NAB

:لاہور

پنجاب حکومت کے ترجمان ملک احمد خان نے قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کے بیان کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب حکومت کے تمام ادارے اور محکمے نیب سے مکمل تعاون کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ 8 فروری کو لاہور میں ایک تقریب سے خطاب کے دوران چیئرمین نیب نے پنجاب کے بعض اداروں کی جانب سے عدم تعاون کی شکایت کرتے ہوئے تنبیہہ کی تھی کہ ‘اب تک مسکرا کر برداشت کیا، لیکن آئندہ عدم تعاون ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا’۔

نیب چیئرمین کا کہنا تھا کہ ‘عدم تعاون کی روش مناسب نہیں، اسے ختم کریں، آئندہ شکایت ہوئی تو حکومت پنجاب کے تمام افسران کے لیے بڑی مشکل ہوجائے گی’۔

جسٹس (ر) جاوید اقبال کے بیان کی تردید کرتے ہوئے ترجمان پنجاب حکومت ملک محمد احمد کا کہنا تھا کہ ‘چیئرمین نیب کے بیان میں کوئی حقیقت نہیں’۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ‘نیب چیئرمین کو پبلک پلیٹ فارم پر اس طرح کا بیان نہیں دینا چاہیے تھا، اگر انہیں یا ان کے ادارے کو کوئی شکایت تھی تو دفتری سطح پر رجوع کرنا چا ہیے تھا’۔

تاہم نیب نے پنجاب حکومت کی تردید کو بھی مسترد کردیا۔

ترجمان نیب نے 56 کمپنیوں کے ریکارڈ سے متعلق حکومت پنجاب کا موقف مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ‘ریکارڈ کے حصول کے لیے پنجاب کی بیوروکریسی کو چار خط لکھے گئے اور متعدد بار زبانی بھی کہا گیا، لیکن کوئی جواب نہیں دیا گیا’۔

ترجمان نیب کا کہنا تھا کہ ‘پنجاب حکومت کی جانب سے ریکارڈ فراہم نہ کرنے پر 23 جنوری کو پریس ریلیز جاری کی گئی اور چیف سیکریٹری پنجاب کو ریکارڈ فراہم کرنے کی درخواست کی، لیکن کوئی جواب نہیں دیا گیا’۔

ترجمان کے مطابق ‘ریکارڈ کی عدم فراہمی پر چیئرمین نیب نے 8 فروری کو نوٹس لیا اور پنجاب کی بیوروکریسی کو ریکارڈ فراہمی کے لیے کہا’۔

ترجمان نیب کا مزید کہنا تھا کہ ‘نیب نے ریکارڈ کے لیے تمام مواصلاتی ذرائع استعمال کیے، حکومت پنجاب کی وضاحت حقائق کے برعکس ہیں’۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here