اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے مزید 6 فلسطینی شہید، 1100 سے زائد زخمی

6 Palestinians killed by Israeli army firing, more than 1,100 injured
6 Palestinians killed by Israeli army firing, more than 1,100 injured

:غزہ

اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے مزید 6 فلسطینی شہید اور 1100 زخمی ہو گئے جس کے بعد ایک ہفتے کے دوران شہید فلسطینیوں کی تعداد 25 ہو گئی ہے۔

 عرب میڈیا کے مطابق آج فلسطینی مظاہرین کی بڑی تعداد غزہ کی پٹی میں اسرائیلی سرحد کے قریب جمع ہوئے جہاں انہوں نے صیہونی فورسز کی بربریت کے خلاف شدید احتجاج کیا اور اس دوران مظاہرین نے ٹائر جلائے اور اسرائیلی فورسز پر پتھرائو بھی کیا۔

اسرائیلی فوج نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے فائرنگ اور آنسو گیس کی شیلنگ کی جس کے نتیجے میں 6 فلسطینی شہید اور 1100 سے زائد زخمی ہوگئے۔

فلسطین کی وزارت صحت کے مطابق 39 سالہ اسامہ خمیس قضی اسرائیلی فائرنگ کا نشانہ بنے اور جمعے کی صبح غزہ کی پٹی کے شمالی قصبے جبالیہ میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہوگئے۔

وزارت کے مطابق بیشتر مظاہرین فائرنگ اور باقی شیلنگ کی وجہ سے زخمی ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ غزہ کی پـٹی پر گذشتہ چند روز سے اسرائیلی فوج اور فلسطینی مظاہرین کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے۔

پچھلے جمعے کو ہونےو الے احتجاجی مظاہروں میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 17 فلسطینی شہید ہوئے تھے۔ بعدازاں مزید دو فلسطینی اسرائیلی فوج کی فائرنگ کا نشانہ بنے تھے۔

گزشتہ دن ہونےو الے احتجاجی مظاہروں کے بعد اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی سے ملحقہ سرحد کو نوگوایریا قرار دے دیا ہے اور اسرائیلی فورسز کی جانب سے سرحد کی نگرانی کے لیے ڈرون کیمروں کا استعمال بھی کیا جا رہا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here