کراچی:اغوا کے بعد تاوان لے کر بچے کو رہا کرنے والے 2 ملزمان مقابلے میں ہلاک

2 kidnappers killed in encounter
2 kidnappers killed in encounter

:کراچی

کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں 3 روز قبل بچے کو اغوا کے بعد تاوان لے کر رہا کرنے والے 2 ملزمان کو پولیس اور سٹیزن پولیس لائژن کمیٹی (سی پی ایل سی) نے کامران چورنگی کے قریب مقابلے میں ہلاک کردیا۔

پولیس کے مطابق ملزمان کی موجودگی کی اطلاع پر اینٹی وائلنٹ کرائم سیل (اے وی سی سی) اور سی پی ایل سی کی مشترکہ ٹیم نے کامران چورنگی کے قریب کارروائی کی، جس پر وہاں پر موجود ملزمان نے فائرنگ کردی، تاہم جوابی فائرنگ سے دونوں ملزمان مارے گئے۔

ملزمان کی شناخت ظہیر مرزا اور ذکی کے نام سے کی گئی۔

پولیس کا دعویٰ ہے کہ مرنے والے ظہیر اور ذکی ہی بچے کے مبینہ اغوا کار تھے۔

دوسری جانب انسپکٹر جنرل (آئی جی) سندھ پولیس نے مقابلے میں حصہ لینے والی پولیس پارٹی کے لیے ایک لاکھ روپے انعام کا اعلان کیا۔

یاد رہے کہ رواں ماہ 6 دسمبرکو ڈیفنس 26 اسٹریٹ پر اسکول سے گھر واپسی پر والدہ کے ہمراہ گاڑی میں سوار ایک 5 سالہ بچے کو اغوا کرلیا گیا تھا۔

ملزمان نے بچے کی بازیابی کے لیے اہلخانہ سے 15 کروڑ روپے تاوان طلب کیا، تاہم بات 3 لاکھ روپے کی ادائیگی پر طے پائی۔

اغوا کاروں نے اہلکاروں کو پہلے ناظم آباد، شارع فیصل، سہراب گوٹھ اور حیدری مارکیٹ بلایا جبکہ تاوان ڈالمیا کے علاقے میں لے کر بچے کو قریبی ریسٹورنٹ میں چھوڑ دیا گیا تھا، جس نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان کھڑے کردیئے تھے۔

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here